Saturday, May 15, 2021
spot_img

حجاب میں ملبوس برطانیہ کی پہلی فائر فائٹر مسلم خاتون

نوٹنگھم سے تعلق رکھنے والی 27 سالہ عروسہ ارشد نے برطانیہ کی پہلی حجابی فائر فائٹر ہونے کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔

عروسہ ارشد نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ وہ بچپن سے ہی زندگی میں کچھ چیلنجنگ کرنے کا ارادہ رکھتی تھیں، بچپن سے جو فائر فائٹر بننے کا خواب دیکھتی تھی آخر کار وہ پورا ہوگیا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ میں تمام تر رکاوٹوں کو توڑ کر اپنے خوابوں کی تعبیر حاصل کرسکی ہوں، مجھے یقین ہے کہ فائر فائٹر بننے کا خواب دیکھنے والی خواتین کا مجھے دیکھ کر کچھ حوصلہ ضرور ہوگا۔

عروسہ نے اپنے انٹرویو میں یہ بھی کہا کہ انہیں خود پر فخر ہے کہ وہ حجاب پہننے والی اور فائر فائٹر بننے کا خواب دیکھنے والی خواتین کیلئے راہیں ہموار کرنے میں کامیاب رہی ہیں۔

عروسہ کا کہنا ہے کہ نوٹنگھم شائر فائر اینڈ ریسکیو سروس نے انہیں ایک ایسا خصوصی حجاب فراہم کیا ہے جو وہ کام کے دوران آکسیجن ماسک کے نیچے پہنتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ پُرامید ہیں کہ انہیں دیکھتے ہوئے دیگر مسلم خواتین بھی ان کے نقشِ قدم پر چلیں گی۔

Advertisementspot_img

Related Articles

Stay Connected

148,181FansLike
8,890FollowersFollow
1,236SubscribersSubscribe
- Advertisement -spot_img

Latest Articles

- Advertisement -spot_img